Saturday, 9 February 2013

Protest news Karachi:

کراچی: بے گناہ افضل گرو کو پھانسی بھارتی عدالتی دہشت گردی ہے ۔ بھارتی عدلیہ مسلم دشمنی میں ہندو انتہا پسند تنظیموں سے بھی آگے نکل گئی ہے۔ بھارت اپنے اندرونی مسائل کو دبانے کے لیے کشمیریوں پر مظالم کر رہا ہے۔ افضل گرو کی پھانسی سے بھارت نے کشمیریوں پر مظالم کے نئے سلسلے کا آغاز کر دیاہے۔ پاکستان فوراً بھارتی دہشت گرد سربجیت سنگھ کو پھانسی دے۔ ان خیالات کا اظہار امیر جماعة الدعوة کراچی انجینئر نوید قمر، تحرکیک آزادی کشمیر کے خالد سیف الاسلام، مسلم لیگ (ن) یوتھ ونگ کے ڈاکٹر امیتاز پالاری، جماعة الدعوة کے حافظ کلیم اللہ، قاری امجد و دیگر نے کراچی پریس کلب کے سامنے تہاڑ جیل میں افضل گرو کی پھانسی کے خلاف کیے جانے والے احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ احتجاجی مظاہرے میں مختلف شعبہ زندگی کے افراد کی بڑی تعداد موجود تھی۔ جنہوں نے ہاتھوں میں بھارت مخالف اور افضل گرو کی حمایت میں احتجاجی پلے کارڈ اور بینر اٹھا رکھے تھے۔ پروگرام کے آخر میں مظاہرین نے انجینئر نوید قمر کی امامت میں شہید افضل گرو کی غائبانہ نماز جنازہ بھی ادا کی۔ اس موقع پر رقت آمیز مناظر دیکھنے کو ملے۔ انجینئر نوید قمر نے احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارت اپنی سیاہ کاریوں اور ناکامیوں پر پردہ ڈالنے کے لیے بے گناہ مسلمانوں پر جھوٹے مقدمات قائم کر کے انہیں سزائیں دے رہا ہے۔ افضل گوروکو پھانسی دینے کے اس بھارتی عمل کو کسی طور منصفانہ قرار نہیں دیا جاسکتا۔ افضل گروکے خلاف نہ تو کھلی عدالت میں مقدمہ چلایا گیا اور نہ ہی انہیں ٹرائل کے دوران وکیل کی خدمات میسر کی گئیں بلکہ محض پولیس کی تیار کی گئی کہانی کی بنیاد پر انھیں مجرم قرار دےکر پھانسی دے دی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے قبل بھارت ایک اور کشمیری رہنما مقبول بٹ کو بھی تہاڑ جیل میں شہید کر چکا ہے۔ افضل گروکی میت ان کے اہل خانہ کے حوالے نہیں کیا گئی کیونکہ اسے پھانسی سے قبل بہت زیادہ تشدد کا نشانہ بنایا گیا تھا ۔ اگر بھارت ان شہدا کے لاشیں حوالے کر دیتا تو اس کے مظالم کے پول کھل جاتے۔ پوری کشمیری و پاکستانی قوم افضل گورو سے محبت اور ان کا احترام کرتی ہے۔ انہیں پھانسی کے پھندے پر لٹکانا کشمیریوں کی آزادی کو صلب کرنا اور ان کی جدوجہد آزادی کو دبانے کی ایک مذموم سازش ہے۔ افضل گرو پر بھارتی عدالتیں قائم کردہ الزامات کو ثابت نہیں کر سکیں۔ وہ ایک نیک اور بے گناہ نوجوان تھے پوری پاکستانی قوم ان کی جرات و بہادری پر انہیں خراج عقیدت پیش کرتی ہے۔ انجینئر نوید قمر نے کہا کہ بھارت مسلمانوں کو دیوار سے لگانے اور پاکستان کو بدنام کرنے کے لیے تمام تر جارحانہ اقدامات کو جاری رکھے ہوئے ہے جبکہ دوسری جانب پاکستان میں ایسے بھارتی جاسوس اور ایجنٹ موجود ہیں جن کے دہشت گردی اور تخریب کاری میںملوث ہونے کے ٹھوس شواہد ملنے کے باوجود تاحال ان کے خلاف کو کوئی سزا نہیں دی گئی۔ بلکہ پاکستان بھارت اور امریکہ کی خوشنودی کو حاصل کرنے کے لیے کئی خطرناک بھارتی دہشت گردوں کو رہا کر چکا ہے اور اب سربجیت سنکھ جیسے دہشت گرد کو رہا کرنے کے لیے راہیں ہموار کی جا رہی ہیں۔ انجینئر نوید قمر نے کہا کہ پاکستانی قوم کے کلیجے ٹھنڈے کرنے کے لیے حکومت بھارتی دہشت گرد سربجیت سنگھ اور پاکستانی جیلوں میں موجود تمام بھارت جاسوسوں اور تخریب کاروں کوجن کو پاکستانی عدالتوں نے دہشت گرد قرار دیا ہے فورا پھانسی دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ اگر امریکہ و بھارت یہ سمجھتے ہیں کہ وہ مظلوم مسلمانوں کی آواز اور جدوجہد کو اس طرح کے بہیمانہ اقدامات سے دبا لیں گے تو یہ ان کی خام خیالی ہے۔ مسلمانوں کے جذبات کبھی قربانیوں اور شھادتوں سے پست نہیں بلکہ ہمیشہ بلند ہوئے ہیں۔ مظلوم کشمیریوں کا بہنے والا خون کبھی رائیگاں نہیں جائے گا۔ وہ دن قریب ہے جب بھارت کو ان مظالم کا حساب دینا پڑے گا۔ تحریک آزادی کشمیر کے رہنما خالد سیف الاسلام نے اپنے خطاب میں کہا کہ بھارتی عدلیہ مسلمانوں کے خلاف انتہائی جانبداری اور ناانصافی سے کام لے رہی ہے۔ کشمیریوں کے حق میں اٹھنے والی ہر آواز کو دبانے کی کوششیں میں بھارت اب تک سینکڑوں بے گناہ کشمیری نوجوانوں کو جھوٹے مقدمات میں ملوث کر کے ماورائے عدالت شہید کر چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں بغیر کسی جرم کے جیلوں میں بند ہزاروں نوجوانوں کو رہائی یا انصاف دلانے کے لیے کوئی قانونی تقاضے پورے نہیں کرنے دیئے جاتے۔ آج بھی کشمیرکی ہزاروں مائیں اپنے بچوں کو تلاش کر رہی ہیں لیکن ان کو اس بات کا علم نہیں کہ ان کا بچہ کس عقوبت خانے میں بھارت کے وحشیانہ مظالم سہ رہا ہے

0 comments:

Post a Comment


 
Design by Lashkar E Islam | Developed by Lashkar E Islam - E-mail | Lashkar E Islam